Google نمونہ کی شناخت کا استعمال کس طرح کرتا ہے

Google تصاویر کو سمجھنے کیلئے نمونہ کی شناخت کا استعمال کس طرح کرتا ہے

کمپیوٹرز تصاویر اور ویڈیوز کو اسی انداز میں نہیں "دیکھتے" ہیں جس انداز میں لوگ دیکھتے ہیں۔ جب آپ کوئی تصویر دیکھتے ہیں تو آپ کو اپنی بہترین دوست اپنے گھر کے سامنے کھڑی نظر آسکتی ہے۔ کمپیوٹر کے تناظر سے، ٹھیک وہی تصویر محض ڈیٹا کا ایک مجموعہ ہے جس کی ترجمانی وہ شکلوں اور رنگ کی اقدار کے بارے میں معلومات کے بطور کرسکتا ہے۔ یوں تو کمپیوٹر اس طرح کا ردعمل ظاہر نہیں کرے گا جس طرح کا ردعمل آپ اس تصویر کو دیکھ کر ظاہر کریں گے، تاہم کمپیوٹر کو رنگ اور شکلوں کے مخصوص نمونے کو پہچاننے کی تربیت دی جاسکتی ہے۔ مثلاً، کمپیوٹر کو شکلوں اور رنگوں کے ان عمومی نمونوں کو پہچاننے کی تربیت دی جاسکتی ہے جو کسی لینڈاسکیپ کی ڈیجیٹل تصویر بناتے ہیں، جیسے کہ ساحل یا کار جیسی کوئی چیز۔ اس ٹیکنالوجی سے Google تصاویر کو آپ کی تصاویر کو منظم کرنے میں مدد ملتی ہے اور صارفین کو آسان تلاش کے ساتھ کسی بھی تصویر کو تلاش کرنے کی سہولت ملتی ہے۔

کمپیوٹر کو شکلوں اور رنگوں کے ان عمومی نمونوں کو پہچاننے کی تربیت بھی دی جاسکتی ہے جو کسی چہرے کی ڈیجیٹل تصویر بناتے ہیں۔ اس کارروائی کو چہرے کی شناخت کے بطور جانا جاتا ہے، اور اسی ٹیکنالوجی سے Google کو Street View جیسی سروسز پر آپ کی رازداری کی حفاظت کرنے میں مدد ملتی ہے، جہاں کمپیوٹرز ایسے لوگوں کے چہروں کا پتا لگانے اور پھر انہیں دھندلا کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو ہوسکتا ہے کہ Street View کار کے گزرنے کے وقت گلی میں کھڑے ہوں۔

اگر آپ تھوڑا سا اور جدید ہو جائیں تو نمونہ کو شناخت کرنے کی اسی ٹیکنالوجی سے جو چہرے کی شناخت کو تقویت فراہم کرتی ہے، کمپیوٹر کو اس کے پتا لگائے ہوئے چہرے کی خصوصیات کو سمجھنے میں مدد مل سکتی ہے۔ مثال کے طور پر، ایسے مخصوص نمونے ہو سکتے ہیں جو یہ تجویز کریں کہ چہرے مسکراہٹ والے ہیں یا اس کی آنکھیں بند ہیں۔ Google تصاویر کی موویز کی تجاویز اور آپ کی تصاویر اور ویڈیوز سے تخلیق کردہ دیگر اثرات جیسی خصوصیات کے ساتھ مدد کرنے کیلئے اس جیسی معلومات کا استعمال کیا جا سکتا ہے۔

اس سے ملتی جلتی ٹیکنالوجی بعض ممالک میں Google تصاویر میں دستیاب چہرے کی گروپ بندی کی خصوصیت کو بھی تقویت دیتی ہے، جس سے صارفین کیلئے اپنی تصاویر تلاش کرنے اور ان کا نظم کرنے کو آسان بنا کر، ایک جیسے چہروں کی شناخت کرنے اور ایک ساتھ ان کی گروپ بندی کرنے میں کمپیوٹرز کو مدد ملتی ہے۔ Google تصاویر کے مرکز امداد میں چہرے کی گروپ بندی کے بارے میں مزید پڑھیں۔

صوتی تلاش کس طرح کام کرتی ہے

صوتی تلاش آپ کو استفسار ٹائپ کرنے کی بجائے کسی آلے پر صوتی استفسار Google تلاش کی کلائنٹ ایپلیکیشن کو فراہم کرنے دیتی ہے۔ یہ بولے ہوئے الفاظ کو تحریری متن میں ٹرانسکرائب کرنے کیلئے نمونہ کی شناخت کا استعمال کرتی ہے۔ ہم آپ کے ذریعہ کہی گئی بات کو پہچاننے کیلئے Google سرورز کو لب و لہجے بھیجتے ہیں۔

صوتی تلاش میں کیے گئے ہر صوتی استفسار کیلئے، ہم زبان، ملک اور جو کچھ کہا گیا تھا اس بارے میں اپنے نظام کا اندازہ اسٹور کرتے ہیں۔ اگر آپ نے اس طرح کے ڈیٹا کے استعمال کیلئے منظوری دی ہے تو ہم اپنی سروسز کو بہتر بنانے، بشمول درست تلاش کے استفسار کو بہتر طور پر پہنچاننے کی خاطر نظام کو تربیت دینے کے واسطے لب و لہجے کو سنبھال کر رکھتے ہیں۔ ہم Google کو کوئی لب و لہجہ نہیں بھیجتے ہیں الّا یہ کہ آپ نے صوتی تلاش کا فنکشن استعمال کرنے کا ارادہ ظاہر کیا ہو (مثلاً، فوری تلاش والے بار میں یا ورچوئل کی بورڈ میں مائکرو فون کے آئیکن کو دبانا یا جب فوری تلاش کا بار یہ ظاہر کرے کہ صوتی تلاش کا فنکشن فعال ہے تب "Google" کہنا)۔

Google ایپس
اصل مینو